وفیات جناب توفیق احمد قادری چشتی مرحوم ء-١٩۴٠( ٢٠١۶ء)

Maarif - - ء٢٠١٦ ستمبر معارف -

جن تھا آیا ذکر کا چشتی قادری احمد توفیق جناب میں شماره گذشتہ کے معارف

کو ان کہ بتایا نے صمدانی انوار جناب صاحبزادے کے ان تھا۔ ہوا کو اگست ٩ انتقال کا خاص کی ان یہی اور تھی حاصل مہارت یرمعمولی میں شناسی نوادر و مخطوطات ایک کی کتابوں میں ء ٩ ہوئے، پیدا میں امروہہ میں ء١٩ ٠ وه بنی۔ بھی سبب کا شہرت جب گیا بن سرمایہ ا ب سے سب وقت اس کا زندگی کی ان کاروبار یہی اور کھولی دوکان نے صاحب انوار کیا، حاصل الب بخط الب دیوان سے بھوپال میں ء۶٩ نے انہوں بھی کو اوروں علم کا وجود کے دیوان اس کہ نہیں انصاف یہ لیکن ہے لکھا کیا’’ دریافت‘‘ کیا ملاحظہ قریب کے ء١٩١٨ یعنی پہلے بہت کو اس نے ہی ی ندو عبدالسلام مولانا تھا، نادر خود وه تھا، کیا حاصل دیوان یہ نے صاحب توفیق سے مرحوم شفیق مولوی جن تھا، دیوان بہرحالتھے۔صفتمجذوب بلکہابالی لاے بتھےمگرمشہور میں یافتکی کتابوں رسول لام پروفیسر اندازه کا اس دی شہرت جو کو صاحب توفیق نے الب بخط الب ایک کاپتھر محضنزدیککےمالکپہلےنسخہ جو‘‘کہہےہوتاسےجملہاسکےمہر جوہری وه کیونکہ گیا۔ بن نور ه کو ہی پہنچتے میں ہاتھوں کے مالک دوسرے وه تھا ا ٹک کہ تھی برکت کی ثقافت اسلامی میں برصغیر کہ ہے یہی بات ہوا’’ ثابت جوہری یا تھا کا فاروقی احمد نثار پروفیسر تاثر یہ تھے۔ نہیں کم سے محقق کسی بھی تاجر کے کتابوں کا سرور تذکره بہ معروف منتخبہ عمده نے صاحب توفیق نہیں، مبالغہ کوئی میں جس تھا کے صاحب صمدانی انوار ہے۔ پرانا سال دوسو قریب جو کیا دریافت بھی مخطوطہ ایک اسمیں زبانفارسی کےشعراءاردوہے،نسخہاصلچوتھا بعدکےنسخوںتینیہمطابق ناتھ بھولا سے حکم کے الدولہ اعظم سرور بہادر خاں میر نواب مولف کتابت کی تذکره سے مسلم یر ایک کے کانپور کو نسخہ نادر اس نے صاحب توفیق تھی۔ کی نے عاشق بھی دستاویزیں قدیم نہایت بعض علاوه کے مخطوطات کیا۔ حاصل عوض کے رقم خطیر ہوا۔ قائم کلکشن چشتی سے نام کے ان لیے اسی میں آرکائیوز نیشنل کیں۔ حاصل نے انہوں ایک گھر کا ان خود ہیں۔ محفوظ و موجود نوادر کے ان میں میوزموں مشہور کے ملک کھنڈ روہیل یہ خاں لله شعائر ڈاکٹر بقول ہیں۔ کتابیں ہزاروں جہاں گیا، بن خانہ کتب عمده دراصل ملکہ یہ کا شناسی نوادر و مخطوطات ہے۔ ذخیره عمده سے سب کا مراجع میں سےکاظمیخلیل مولانا بزرایککےامروہہہوا۔حاصلکوانطفیلکےالٰہیتوفیق کتابوں کئی ہوئیں، شائع تحریریں کئی کی ان میں معارف تھا۔ بھی سلسلہ کا ارادت و محبت شاه سید حضرت عارفانہ، تجاہل کا شوستری نورلله قاضی جیسے تھے، بھی مولف کے ترتیب زیر کتابیں دو کہ ہوا معلوم حنفی۔ سنی مذہب کا واسطی سہروردیحسین الدین شرف کے ان مطالعہ۔ ائر ایک کا ہندوستان اقوام دوسری اور کون دشمن کا صوفیہ ایک ، تھیں اور دے توفیق کی اشاعتکی کتابوں ان تعالیٰ للهکو صمدانی انوار جناب صاحبزادے لائق

ص-ع نوازے۔ سے مغفرت و رحمت اپنی کو توفیق جناب خود

Newspapers in Urdu

Newspapers from India

© PressReader. All rights reserved.