غالب کے نسخۂ حمیدیہ کے بیان میں تسامحات

Maarif - - اكتوبر ر - نزل، دینہ گ علی ر، ن سرسید نیو ٢ اگست

جده زید ، ر دیر ب جن لی ع حترم

تہ وبرک ورح علیکم السلام

ر ظ پروفیسر یں ره ش کے ٢ ئی کے ر ہ ن نسخہ جو ے وا ئ ش پر کلام وعہ ج اس کے لب غ لہ ک ی صدی د اح ت ج ک پر بن اس یدیہ ح ہ نسخ کو دیوان اس کے لب غ ے۔ لات ک یدیہ ح اصلا ر تھ یں ل بھوپ نہ، خ کتب کے ں خ ید ح نواب دیوان یہ کہ ے فوجدار وں ے چھو کے م بی ں ج سکندر نواب یں ل بھوپ نسخہ یہ کتب کے ں خ ید ح نواب دیوان وه پھر یآ یں نہ خ کتب کے ں خ د ح اس تو وئی ل ش یں ن ندوست ل بھوپ ست ری جب ۔ گی ن پ یں نہ خ نواب یں جس وگئی ئب غ ری ال پوری وه یں ہ ن کے م انض بھی یدیہ ح ہ نسخ یں ان ، تھے رکھے ت خطوط در ن نے ل بھوپ حب ص وا ر ظ یں سے ریکہ ا اب اور ر ود برسوں نسخہ یہ ۔ تھ صل ح شر یہ کو ل بھوپ ے۔ ی ور فروخت پی ک ل یجی کی اس اور ے نسخے ختل م ب اور م ا دو کے دیوان کے لب غ سے ر ش اس کہ ے نسخہ، دوسرا اور ے لات ک ل بھوپ ہ نسخ ی یدیہ ح ہ نسخ لا پ وئے۔ د برآ ے چھو کے م بی ں ج سکندر نواب ے۔ لات ک لب غ ض بی ی ہ رو ا ہ نسخ لب غ وه اور تھے ت ل ت سے لب غ کے ں خ د ح فوجدار نواب وں جب کہ یں لکھتی ی رو ف ں فش ا ر تھے۔ تے ج لی د برابر لنے سے نے وں ان نسخہ یہ تو وگئے نسخے کئی کے دیوان کے ان س پ کے لب غ کے غدر ے۔ لات ک یدیہ ح ہ نسخ اب جو کردی دیہ کو ں خ د ح فوجدار ل بھوپ کو لب غ سے نب ج کی ل بھوپ نواب نے ں خ د ح فوجدار پر و د ح فوجدار نواب بھجوائی۔ بھی م ر ایک کو ان اور دی دعوت کی نےآ نچ پ ل بھوپ کیسے ہ رو ا نسخہ تھے۔ ریبی ت ل ت کے لب غ سے ں خ

کے ں خ د ح دار فو کہ ے ی ی ن ک ا ر یں ن لوم ری ت کی اس

۔ وگ نچ پ ل بھوپ وه ہ ری لہ اس ے، پر سے ت ح تس لہ ک ی صدی د اح ر ظ پروفیسر کے دیوان کے ان کہ یں نصیب خو لب غ یں۔ ت ح تس یل ندرجہ یں کی لب غ ے۔ ل ح ک خصوصیت اپنی نسخہ ر اور یں نسخے سے ت ب

یں یل در وه وئے ئ ش دیوان جو یں زندگی یں لی د یں اکتوبر یشن ای لا پ ک دیوان کے لب غ ضی، حوض دارالسلام طب ر ب دوسری ٢ یں۔ اغلاط یں وا۔اس ئ ش طب یں۔ ت ب اغلاط یں اس وا۔ ئ ش یں ئی سے لی د ں غلطی یں اس وا ئ ش کو جولائی ٢ سے لی د دره، ش دی اح طب کرکے درست خود ں غلطی کی یشن ای تیسر نے لب غ یں۔ ت ب اگره، خلائق، طب ۔ کرای ئ ش یں ٢ جون سے نپور ک ی نظ

۔ ارام، نرائن شیو نشی م ت ب دیوان اخری یں زندگی کی لب غ کرده ئ ش ک شیونرائن نشی

سین ابن نے ن الرح ظل سید حکیم پروفیسر عکس ک دیوان خریآ اس ۔ ے حب ص حکیم یں ٢ ے کردی ئ ش ره دوب سے گ علی ی، اکی یں لکھتے یں ر ب کے یدیہ ح ہ نسخ وه اور یں لی بھوپ بھی خود دیوان اردو اپن کرکے ب انتخ سے دیوان اصل جس نے رزا

دار فو ں ی نسخہ ایک ک اس سے نصیبی خو تھ کی ر تی سے ں ج تھ وظ ح یں نہ خ کتب کے ل بھوپ در ب ں خ د ح خطوطہ اصل، ے وا ئ ش سے م ن کے یدیہ ح نسخہ یہ

ظل سید حکیم ہ د و لاحظہ ۔ ے کرده بت کت ک ٢ دیوان کرده ئ ش سے گرهآ ک آرام نرائن شیو نشی ن، الرح

، ٢ ، گ علی عت طب عکسی، لب غ ب انتخ دیوان یہ ے۔ ری ت طویل کی یدیہ ح ہ نسخ دیوان کے لب غ

کر بن رج کو نسخہ اسی لب غ کلام رین لیے اس ے۔ ک بل سے کلام دان ر چ نچہ چن یں، ے ر کرتے یق تح و بح یں ر ب کے لب غ کیے، ر ظ لات خی اپنے اپنے پر یدیہ ح ہ نسخ کے لب غ کلام نے وروں اپنے کو یدیہ ح ہ نسخ کرکے زین سے لات خی اپنے اور کی تدوین کی اس لب غ کلام کر ج ل بھوپ نے لوگوں ان ۔ کی ئ ش تھ س کے رکس ری نہ ل ع وں کرت ل ن ی گرا ئے اس کے ان یں یل ۔ کی ل ن سے یدیہ ح ہ نسخ کو

کر ج ر ب کئی ل بھوپ نے عرشی ں خ علی ز تی ا ولان : عرشی نسخۂ شیہ ح یں لب غ کلام ے، کی ر تی نسخہ اپن اور کی ل ن کو یدیہ ح ہ نسخ کو ان ، تھ دی لا نے حب ص انوارالحق تی سے تن اصل کو ر اش کے ت و لت تھے۔ کرسکے نہ ل ن دیوان پورا حب ص عرشی ر ، کی الگ نسخہ سے عرشی ہ نسخ نے ی رو ف د اح ر ن پروفیسر ع ب کے ر س اور لکھ پر ہ رو ا نسخہ ہ د ل شت پر ت ح ص کرکے وازنہ ک ہ رو ا ک تصحی کی یدیہ ح ہ نسخ صل ا در ہ رو ا نسخہ کہ ے ی بت اور ے ونہ ن لی ع کرکے وازنہ ک غزلوں چند نے وں ان اور ے رج ده ع

ے۔ کردی پی بھی حب ص پروفیسر : مرتبہ کا خاں احمد حمید پروفیسر حمیدیہ نسخہ نسخہ اس لیے اس ے۔ کی ئ ش تھ س کے ت لی ت اپنی کو یدیہ ح ہ نسخ نے تس یہ ک ی صدی ر ظ ر ۔ تھ ضروی کرن وازنہ ک نسخہ اصل سے

۔ کی یں ن تبصره پر اس وں ان کہ ے اصل سے رات ا اپنے نے وں ان ابادی:حیدر عبداللطیف سید نسخہ نے وں ان پھر ۔ رکھ س پ اپنے ل س ایک اور کرلی صل ح کو یدیہ ح نسخہ تھ ر چھ نسخہ کرده ر تی ک ان یں پریس جس ر ۔ کی ر تی نسخہ اپن علی ز تی ا ولان فر ایک ک اس ل رح ب گئی۔ لگ ا یں پریس اس اس ۔ دی چھ تھ س کے تبصره اپنے کو اس نے وں ان اور گی ل کو عرشی پر نسخہ اس ت و لکھتے لہ کہ تھ فرض ک ی صدی د اح ر ظ ر اک لیے

کرتے۔ تبصره بھی تی نسخہ بجنوری: ڈاکٹر مقدمہ مع صاحب انوارالحق مفتی نسخہ سے تن اصل کو ر اش کے شیے ح یں اس کہ ے یہ عیب ک انوارالحق ولان وگئے۔ گ ر اش کے شیے ح اور تن لیے اس ے۔ گی دی لا پی کرکے الگ سے تن کو ر اش کے شیہ ح یں نسخہ اپنے نے عرشی ہ زاوی فکری اپنے اپنے نے ین ح ر چ کو یدیہ ح ہ نسخ طر اس ے۔ کی لا ب کوره ۔ کی زین کو اس سے لات خی اپنے اور کی رتب سے نظر ہ نسخ شخ جو لیے اس یں۔ وئے ر ت سے یدیہ ح ہ نسخ نسخے روں چ ہ ل ط ک نسخوں روں چ ان وه کہ ے لازم پر اس ئے ھ ا لم پر یدیہ ح یہ کی حب ص ی صدی ر ظ ر اک ۔ کر سے اصل وازنہ ک ان اور کر ر لیے اس ۔ کی یں ن رض ت سے نسخوں ان نے وں ان کہ ے غلطی ی ب تک جب ے، ن لہ ک ی صدی ر اک کہ ے کرسکت حسوس ری ئے۔ ج کی نہ ہ ل ط بلی ت ک نسخوں ر ت روں چ سے یدیہ ح ہ نسخ اصل

نسخہ نے ی صدی ر ظ ر اک کہ ے یہ تس دوسرا یں لہ اس دوسر اور دسنوی وی عبدال یں نہ ز کے ونے الخبر ود کے یدیہ ح ئ ض ت و پر ری ت کی اس کیں کوششیں جو یں تلا کی اس نے نظر ل ا جد یہ کی ان تو وگی د برآ یں ٢ سے ریکہ ا نسخہ اصل کہ جب کی تھی۔ نہ ضرورت چنداں کی لکھنے ری ت طویل اتنی نی ی ے۔ ئل لاط د ج و ہ نسخ وازنہ ک یدیہ ح ہ نسخ وه کہ تھ لازم پر ی صدی ر اک

ے دیوان لا پ سے سب اور م ا سے سب ہ رو ا نسخہ کرتے۔ سے ہ رو ا سے سب بھی کلام یں اس ے۔ ک بل سے کلام ب انتخ اور ے ل ک جو سے سب بھی تدوین ری ت کی اس ے دیوان لا پ سے سب یہ اور ے ده زی نظر کو ہ رو ا ہ نسخ غلطی ی ب کی ی صدی ر اک نی ی ے۔ دیم ده زی یت ا ده زی بھی سے یدیہ ح ہ نسخ تو دیوان یہ اصل در ے۔ کرن انداز یں ن ل ن کو اس نے تب ک کسی ے لب غ بخط دیوان پورا یہ اور ے رکھت یں اس اور ے کی ل ن دیوان پورا سے لم اپنے نے لب غ خود بلکہ ے کی کی دواوین م ا چند یں یل یں۔ ده زی بھی ں عی رب اور غزلیں یت ا کی ہ رو ا نسخہ سے جن یں پی داد ت کی ر اش کے ان اور ری ت پور تخل ک اسد رزا یں ہ رو ا ہ نسخ پھر گی ئے وج واض

ے۔ یں ن لب غ ے، د اس یں دیوان ، ٢ یدیہ ح ہ نسخ ۔٢ ر اش داد ت ، ہ رو ا ہ نسخ

۔٢ داد ت ، ٢ شیرانی ہ نسخ ۔٢ ر ش ا داد ت م ا م ت کے لب غ یں اس کہ ے یہ صیر ت کی لہ کے ی صدی ر اک وازنہ ک یدیہ ح نسخہ سے ان ے گی کردی نظرانداز کو نسخوں کے دیوان یہ لیے اس ے۔ تس ا ب ت ب دین چھو کو ہ رو ا ہ نسخ نی ی ، گی کی یں ن ہ نسخ ے رج و خ یہ اصل در ے۔ ک لے پ بھی سے یدیہ ح ہ نسخ دیوان

ے۔ سکتی ج کی سے ہ رو ا ہ نسخ تصحی کی یدیہ ح ہ نسخ ۔ ک یدیہ ح کرن نہ وازنہ ک یدیہ ح ہ نسخ سے شیرانی ہ نسخ تس ا ب ایک

یں اس ے وئی ئ ش سے ریکہ ا پی ک ل یجی کی یدیہ ح نسخہ جو ے ک یدیہ ح نسخہ یں اس ے لکھ نے ی رو ف ں افش ر ہ د نہ ل ع جو ک ٢ شیرانی نسخہ ے، کی سے شیرانی ہ نسخ تھ س کے ق ت وازنہ

ے۔ دونہ بھی سے ہ د نہ ل ع اس نے حب ص ی صدی ر اک طر اسی

ہ د ے۔ لکھ پر ہ رو ا ہ نسخ نے ی رو ف د اح ر ن جو ی ھ ا یں ن ن

ے کی نے وں ان سے یدیہ ح ہ نسخ وازنہ ک اس ے، وا پھیلا پر ت ح ص ک ی رو ف د اح ر ن پروفیسر نے س کے حب ص ی صدی پروفیسر چونکہ زبردست ایک پر یدیہ ح ہ نسخ خود نے حب ص ی رو ف ۔ ر یں ن لہ لہ اس ر تھ لازم پر ی صدی پروفیسر دین جواب ک جس ے کی تبصره یہ کی حب ص ر ن نے ی صدی پروفیسر سے وجہ کی کرنے انداز نظر کو سوده ک سوده کے ل بھوپ ہ نسخ ہ، رو ا ہ نسخ کہ دیکھی یں ن رت عب لب، غ دیوان ی، رو ف د اح ر ن ہ د دوم، جلدبر، ن لب غ ک و ن ے۔

٢ ور، لا ، و ن کرده ئ ش ، ہ رو ا نسخہ ہ نسخ کہ لیے اس ے کی غلطی ف نے حب ص ی رو ف ر ن ں ی

اس وا، دون یں ہ رو ا نسخہ اور وا دون یں ٢ یدیہ ح ر اش سے اس تو تھ نہ ی وجود ک یدیہ ح ہ نسخ یں جب لیے ی ہ رو ا نسخہ یں ٢ البتہ ۔ وت یں ن پیدا ی سوال ک کرنے اخ سب ہ رو ا ہ نسخ کہ ے ی ی لب غ ن گ لیے اسی تھی وجود لب غ ض بی کرکے اخ کلام اپن سے ض بی اپنے نے لب غ کو جس ے دیوان لا پ سے سے دیوان دوسر کسی اوروه دی شکل کی دیوان کو اس اور کی ج

ے۔ لت بوت کوئی ک اس نہ اور ے یں ن خو جو نے حب ص ی صدی د اح ر ظ پروفیسر کہ ے یہ روضہ یرا پروفیسر ور ا کردی انداز نظر کو ان یں کیے یق تح پر لب غ نصو دی بنی ہ رو ا ہ نسخ اور ے لکھ ہ د ل شت پر ت ح ص نے ی رو ف د اح ر ن انداز نظر کو اس ے کی وازنہ ن ی در کے عرشی یدیہ ح نسخہ اور پر بلی ت جو ن ی در کے یدیہ ح نسخہ اور شیرانی نسخہ طر اسی اور گی کردی نے ی صدی ر اک بھی سے اس ۔ کی نے ی رو ف ں افش ر ے، کی ہ ل ط سے دواوین رو کے لب غ کہ تھ یہ تو واجب پر ان ۔ ی فر یں ن رض ت پور رام نواب نے عرشی علی ز تی ا ولان جو کرتے وازنہ ک یدیہ ح ہ نسخ اورجدید دیم کے پور رام کرتے وازنہ سے ان تھے، بھیجے دواوین اپنے کو م ت ان یں خرآ کرتے۔ ہ ل ط بلی ت سے رعن گل اور دیکھتے کو دواوین د اح ر ظ پروفیسر کہ ت وں کرت پی کے سنین رست ف ایک کی دواوین ایسے اور ت ح تس سے ت ب یں لہ کے ان کہ ئے وج اندازه کو ی صدی جو دواوین ر چ وه خصوص یں لق ت سے یدیہ ح ہ نسخ جو یں ت وضوع یں اب وں۔ کرچک سے صیل ت یں کر ک جن سے یدیہ ح نسخہ یں ر ت رست ف یہ وں۔ کرت ل ن سے ور لا دوم برجلد ن لب غ و ن یں یل ر ن رست ف جو اور ے ل ک جو ے کی ر تی نے عرشی علی ز تی ا ولان

ے۔ ن وه ے کی پی یں ہ رو ا نسخہ نے ی رو ف د اح

لب غ ض بی نسخہ ی ہ رو ا ہ نسخ ٢ ل بھوپ ہ نسخ ی یدیہ ح ہ نسخ ٢

٢ ور لا شیرانی نسخہ ٢ رسی ف اردو رعن گل ب انتخ دیم پور رام ہ نسخ کراچی یوزیم ت لی ہ نسخ جدید پور رام نسخہ ہ نسخ ، عبداللطی سید یدیہ ح نسخہ عرشی۔ یدیہ ح ہ نسخ اگر ہ د انوارالحق تی یدیہ ح نسخہ ور ا ں خ د یداح ح پروفیسر یدیہ ح بنتے نسخے دس یہ کے لب غ دیوان تو ئے ج کرلی ل ش کو بجنوری ر اک نسخوں کے دواوین ترین م ا کے شرو کہ ے بھی یہ ت ب عجیب اور یں وا ر تی یں ہ رو ا نسخہ نی ی ے فرق ک برس ن پ ی ر چ یں یں ٢ شیرانی نسخہ اور وا دون یں ٢ یدیہ ح ہ نسخ اور رو ہ ل ط بلی ت ن ی در کے ان یں، م ا ده زی دواوین تین ی ی وا۔ ل ک

۔ کی یں ن ادا نے حب ص ر اک حق ک اس ے۔ لب غ سے ل خی کے ظت ح دیوان ایک اپن نے لب غ ت و تے ج کلکتہ وں ان جو ے وه دیوان دوسرا ۔ تھ دی رکھ یں نده ب س پ کے دوست ایک ی ل ریں دو پر جس ، تھ کی داخل یں ر سرک ریزی ان یں کلکتہ نے ن پ جو کہ ے ر لحوظ یہ یں۔ ن علم ک اس جھے یں ں ک وه اب تھیں۔ نسخہ اگر تھے کے کلام ب انتخ وه وئے ئ ش یں زندگی کی لب غ دواوین سے کلام نص کے لب غ رئین تو وتے نہ ئ ش ہ رو ا ہ نسخ اور یدیہ ح کی دون یں ر ع کی برس ٢ نے لب غ یدیہ ح ہ نسخ تے۔ ج ره حروم دیکھیے ۔ کی ل ک یں ر ع کی برس نے وں ان ہ رو ا ہ نسخ ر تھ

ی۔ رو ف ں افش ر از یدیہ ح ہ نسخ پی ک ل یجی ہ د ر ے ئ گنج ی ب کی لکھنے پر وضو اس اصل در کرکے نظر صر سے وضو دی بنی نے ی صدی د اح ر ظ پروفیسر

ے۔ دی چھو تشنہ کو لہ اپنے ط ف والسلام

ڈاکٹر سید احتشام احمد ندوی

Newspapers in Urdu

Newspapers from India

© PressReader. All rights reserved.