اخبار علمیہ

Maarif - - نبأ -

نوشہره’’ کا قرانٓ باغ‘‘

مدرسہ نامی عثمانیہ جامعہ واقع میں نوشہره ضلع کے پختونخوا خیبر

ہیں گئے لگائے پودے کے انواع ؍۲۱ ان میں اس ہے۔ گیا لگایا باغ منفرد ایک میں اس ہے۔ گئی رکھی میں ء۲۰۰۹ بنیاد کی اس ہے۔ آیا میں مجید قرآن ذکر کا جن پر جس ہے گئی کی نصب تختی کی اسڻیل سی چھوڻی ساتھ کے پودے ہر میں اور سوره پاره، کس کے قرانٓ بھی یہ اور ہے نام پشتو اور اردو عربی، کا پودے ایم مشتمل پر صفحات۸۰ سے۲۰ کے طلبہ پر پودوں ان ہے۔ ذکر کا اس میں ایٓت اور یونیورسڻی پشاور لیے کے تحقیق ہیں۔ جاتے لکھائے مقالات تحقیقی کے فل کے رپورٹ ہے۔ قائم بورڈ الگ مشتمل پر اساتذه کے یونیورسڻی زرعی کی پشاور ہے۔ گیا کیا نہیں تقرر کا ملازمین سے الگ لیے کے نگرانی کی پودوں ان مطابق مقصد ایک کا اس مطابق کے منتظمین ہیں۔ کرتے بھال دیکھ ہی طلبہ کے مدرسہ موسمیاتی اور ائٓے بیداری متعلق کے افادیت کی ان میں لوگوں کہ ہے بھی یہ کا تصور خام مگر عام اس اور جاسکے پایا قابو پر مسئلہ کے الٓودگی اور تبدیلی تفصیل( ہیں۔ جاتے ره کر بن نصابی صرف طلبہ کے مدرسہ کہ ہو بھی رد

ہے) جاسکتی کی ملاحظہ پر ۱۲ ص ء،۲۰۱۸ جون ؍۹ سہارا، راشڻریہ

دبئی’’ کا بائیسواں عالمی قرانٓ ایوارڈ‘‘

جس ہے۔ ہوتا انعقاد کا قرانٓ ہٴمسابق عالمی میں دبئی سال ہر سے برسوں مسابقہ عالمی بائیسویں کے سال اس ہیں۔ لیتے حصہ طلبہ کے ملکوں اکثر میں میں ای اے، یو، البیان‘‘’’ اخبار لیا۔ حصہ نے طلبہ کے ممالک ؍۱۰۴ میں قرانٓ حمزه کے لیبیا برہان، احمد کے امریکہ میں سیشن اخٓری مطابق کے خبر شائع کے عرب سعودی حرکات، احمد کے الجیریا معروف، محمد کے تیونس اور بشیر کے بحرین الناصر، عبد خالد کے برطانیہ واری، عمر کے مالی ابراہیم، الساوی ایتھوپیاکے اور جبریل حسن کے نائجیریا اور نہاد ناصر کے اردن عبداللطیف، لیے کے انعام پہلے ہوئے۔ فائز پر درجات دس اعلیٰ بالترتیب نے جوہرمحمد کیے۔ مختص درہم لاکھ ڈیڑھ لیے کے تیسرے اور دو لیے کے دوسرے ڈھائی، کے ایشن ایسوسی سائنڻفک اور ثقافت کے دبئی تقریب باوقار کی انعامات تقسیم الاقوامی بین کئی سمیت شریفین حرمین ائمہ میں جس گئی۔ کی منعقد میں اڈٓیڻوریم مذکوره کہ گیا کہا ہوئے بتاتے تفصیلات کی تقریب کی۔ شرکت نے شخصیات پہلی کی المبارک رمضان میں مرحلے پہلے ہے۔ منقسم میں حصوں تین تقریب تیسرے اور انعقاد کا قراٴت حسن میں مرحلے دوسرے دروس، میں راتوں سات راشد احمدبن ہے۔ جاتا نوازا سے ایوارڈ کو شخصیت اسلامی بہترین کی سال میں انعامات کو طلبہ کامیاب اور کی شرکت خصوصی مہمان بحیثیت نے المکتوم

طالب امریکی والے لانے پوزیشن پہلی نے شرکاء اور مہمانوں تمام کیے۔ تقسیم نے میں بعد کے سعادت حصول اس کہ کہا نے بچے اس کی۔ تعریف کی علم کرنے وقف لیے کے خدمتکی اسلامیہ علوم اور الٰہی کلام کو زندگی پوری اپنی کی والدین اپنے میں گا۔ بنے سفیر کا اسلام میں امریکہ وه ہے۔ کرلیا عزم کا کی وںٴدعا اور افزائی حوصلہ کی ان کیونکہ ہوں چاہتا بننا ڻھنڈک کی انٓکھوں کا شخصیت اسلامی بہترین کی سال ہے۔ ہوئی حاصل مجھے سعادت یہ ہی بدولت کی کوان الحذیفی علی شیخ خطیب و امام پرانے کے نبویؐ مسجد سال اس اعزاز لاکھ دس یہ گیا، دیا میں اعتراف کے خدمات عظیم کی علوم دینی اور کریم قرانٓ ملاحظہ ءمیں۲۰۱۸ جون ؍۹حیدرابٓاد، منصف تفصیل( ہے۔ نقد مشتمل پر درہم

فرمائیں)

سچیترا’’ کا حیرت انگیز کارنامہ‘‘

تعلق سے گھرانہ موسیقار ایک کے کرناڻک صوبہ میں ہندوستان

دنیا کو اس ہے۔ طالبہ ایک کی جماعت ساتویں میں دبئی سچیترا والی رکھنے اس کی اس ہے۔ دلچسپی خصوصی سے گانے گانا میں زبانوں مختلف کی درج میں ریکارڈ ورلڈ آف بک گنیز میں ہی حال نام کا اس سبب کے مہارت کیا اغٓاز کا موسیقی کلاسیکل سے برس ؍۸ نے اس مطابق کے خبر ہے۔ گیا کیا ء۲۰۱۷ نومبر کی۔ شروع مشق کی گانے میں زبانوں مختلف میں ء۲۰۱۶ اور میں زبان پائنی پھر عربی، بعد کے اس گیا۔ گانا میں زبان جاپانی نے اس میں کا اس رہی۔ سیکھتی گانا کا زبان نئی ایک ہفتہ ہر بعد کے اس کی۔ کوشش بھی اور ہیں لگتے گھنڻے دو میں کرنے یاد اور سیکھنے گانا ایک اسے کہ ہے کہنا کے اس ہے۔ ہوجاتا یاد گانا بھی میں گھنڻے ادٓھے صرف تو ہو تلفظ اسٓان سے سب رکھنا یاد گانے کے زبانوں جرمن اور ہنگری فرانسیسی، مطابق اس ہیں۔ جاتے لگ بھی دن دو کبھی کبھی میں کرنے یاد انہیں اور ہے مشکل اور میں زبانوں ؍۷۶ نے نواس سری راجو کیسی ڈاکڻر میں ء۲۰۰۸ قبل سے گاکر گانے تک منٹ ۲۰ گھنڻے ۳ مسلسل نے گوگن اینڈرے کی رومانیہ ہندوستانی میں دبئی کو ء۲۰۱۸ جنوری ؍۲۵ نے سچیترا تھا۔ بنایا ریکارڈ حاضرین کرکے مظاہره کا فن منفرد اپنے میں تقریب ایک کی خانے سفارت منٹ ۱۵ گھنڻے ۶ مسلسل میں زبانوں ؍۱۰۲ اور دیا ڈال میں حیرت ہٴورط کو بلوچی، بڈاگو، ذٓربائیجانی،ا اسٓامی، البانوی، سنسکرت، گائے۔ گانے تک بلغارین، بھوڻانی، بھوجپوری، بنگالی، افریقی، میتھلی، باروسی، باسک، جالیسڻونین، انگریزی، ولندیزی، ڈوگری، دھیوہی، ڈینش، چیک، کیڻونپس، کونکانی، کیورک، گجراتی، گورانی، یونانی، جرمن، گڑھوالی، فرنچ، فنش، کیوشیا، مالڻیز، ملائی، ملاگاسی، روبین، نیپالی، مراڻھی، کوریائی، سلوویینڻن، سلواکی، سناملی، سندھی، سربیائی، روسی، رومانی، راجستھانی،

ازبک، یوکرینی، تیونر، تبتی، تھائی، تمل، تاجک، تاگلوک، ویدش، صومالی، لینڈی، ائٓس جاپانی، اطالوی، زولو، یوروبا، یاکونی، ووشہ، ویلشن، ویتنامی، وغیره ہندی اور عربی اردو، پرتگلی، ہسپانوی، رمینیائی،آ ترک، پشتو، کرد، ء۲۰۱۸ فروری ؍۲۲ دہلی، خبریں، روزنامہ( ہے۔ گاتی گانے اسٓانی بہ وه میں

)۷۹ ص ء،۲۰۱۸ مئی دنیا، اردو بحوالہ

فادر’’ افٓ ڻیریرزم‘‘

شامل میں نصاب میں اسکولوں میڈیم انگلش بعض کے راجستھان

افٓ فادر’’ کو تلک دھر گنگا ازٓادی مجاہد پر ۲۶۷ ص کے کتاب کی اڻٓھ درجہ یہ ہے۔ کی شائع نے ناشر کسی کے متورا‘‘’’ کتاب ہے۔ گیا بتایا ڻیریرزم‘‘ نظر نقطہ خاص تلک دھر گنگا میں سلسلہ کے تحریک قومی کہ ہے صحیح قابل اور دلچسپ ہے۔ نہیں درست دینا قرار گرد دہشت کو ان تاہم تھے حال کے سے ایجوکیشن سکنڈری افٓ بورڈ راجستھان اسکول یہ کہ ہے یہ بات ذکر اس نے خاندان اہل کے ان پذیر قیام میں پونہ مطابق کے رپورٹ ہیں۔ ملحق توجہ جانب اس کو حکومت صوبائی ہوئے لیتے سے سنجیدگی کو معاملہ پابندی پر اس اور نکالنے سے کتاب کو تبصره امٓیز توہین اس اور ہے دلائی ہفت تفصیل( ہے۔ کیا مطالبہ کا کرنے کارروائی خلاف کے ناشر اور لگانے

دیکھیں) پر ۳۱ ص ء،۲۰۱۸ مئی ؍۲۶ -۲۰ دہلی، انگریزی، ریڈینس، روزه

سے بیروت کی ترجمہ عربی کے تعلیم‘‘ گزشتہ کی مسلمانوں’’

کے گڑھ علی قیام کے شبلی علامہ تعلیم‘‘ گزشتہ کی مسلمانوں’’ پر فرمائش کی سرسید نے انہوں کو جس ہے، تصنیف اولین کی زمانے بمقام ء۱۸۸۷ دسمبر ؍۲۷ منعقده( اجلاس دوسرے کے کانفرنس ایجوکیشنل پریس قومی کو اس نے سرسید تھا۔ کیا پیش میں صورت کی مقالہ میں )وٴلکھن کے کالج اور ممبران کاپیاں کی اس کراکے طبع میں ء۱۸۸۸ جون سے وٴلکھن گزٹ ڻیوٹ انسڻی گڑھ علی پر اس اور تھیں کی بھی تقسیم میں خواہوں بہی اعظمی زیب اورنگ ڈاکڻر کہ ہے خبر تھا۔ لکھا بھی تبصره مفصل میں ترجمہ عربی کا اس نے اسلامیہ) ملیہ جامعہ عربی ہٴشعب پروفیسر اسسڻنٹ( بیروت العلمیہ، دارالکتب سے نام کے الاسلام‘‘ طورھا کیف و العلمیۃ الحرکۃ’’ ظفر پروفیسر مشتمل پر تعارف کے کتاب اس ہی ساتھ ہے۔ کیا شائع سے مقالہ کے گڑھ علی اسڻڈیز، اسلامک ہٴشعب صدر سابق اصلاحی الاسلام تعلیم: گذشتہ کی مسلمانوں تصنیف اولین کی گڑھ علی ایام کے شبلی علامہ’’ کا ء)۲۰۱۴ دسمبر نومبرو نمبر، شبلی معارف شده شائع( مطالعہ‘‘ تعارفی ایک ء)۲۰۱۸ مئی ؍۲۴ ایڈیشن، گڑھ علی انقلاب،( ہے۔ منسلک بھی ترجمہ عربی

اصلاحیصک،

Newspapers in Urdu

Newspapers from India

© PressReader. All rights reserved.