شادؔ عظیم آبادی کی شعری خصوصیات

ڈاکٹر محمد زبیر

Maarif - - ء٢٠١٨ ستمبر معارف -

نہ دبستان یہ ہے۔ مسلّم حیثیت ادبی کی دبستانوں میں ادب اردو ہوئے ثابت کارگر اور میناہم وترقی ترویج کی ادب و زبان اردو صرف ان ہیں۔ رکھتے بھی شناخت منفرد ایک پر سطح علاقائی اور ادبی ہینبلکہ اہمیت خصوصی بھی آباد عظیم دبستان بعد کے ولکھنؤ دہلی میں دبستانوں باکمال اور دانشوروں متعدد کے ادب اردو میں جس ۔ ہے حامل کا بھی کا آبادی عظیم شاد نام ایک میں باکمالوں انہیں ۔ ہے حصہ کا شخصیتوں ہے۔ بھی آج اور ہے رہا قائل زمانہ ایک کا شاعری ارفع و اعلیٰ کی جن ہے بڑی انہیں نے قدرت ۔ ہوئے پیدا میں پٹنہ کو ء١٨۴۶ آبادی عظیم شاد ۔ تھا نوازا سے دولت کی طبع موزونی اور ذوق وادبی علمی سے فیاضی حسین الفت کی۔ حاصل سے اساتذه لائق تعلیم کی دینیات اور فارسی، عربی دبیر مرزا و انیس اورمیر لی اصلاح پر شاعری اپنی سے آبادی عظیم فریاد کا ملاقات سے سرسید اور حالی براں مزید اٹھایا، فیض سے صحبتوں کی تبحر اور پذیری اثر اورشعری تعلیمی کی ان تھا، حاصل انہیں بھی شرف لکھاہے: میں ‘‘ الہام میخانۂ’’ نے آبادی عظیم حمید متعلق سے علمی خواجہ اور شاگرد کے اشکی حضرت واسطہ بیک د شا’’

بھی میں کلام کے ان ۔ تھے العلم طالب جید کے اسکول کے درد امتیاز طرهٔ کا طلبہ کے مدرسے کے درد جو آتاہے نظر اثر وہی بھی سے مذاق لکھنوی اس کاکلام ان کہیں کہیں لیکن تھا انیس میر جب تھا۔ رائج میں اودھ وقت اس جو ہے آتا متاثرنظر اس خصوصا اور شاعری کی ان پر شاد تو آئے آباد عظیم مغفور

تھا۔ جاتا پایا میں سلاموں مثل بے کے انیس پڑاجو اثر کا فلسفہ داخل ہاں اپنے کو چیزوں ان نے د شا ہوکر پذیر اثر سے ان

رکھی بنیاد مستحکم ایسی ایک کی شاعری فلسفۂ اپنے کرکے

Newspapers in Urdu

Newspapers from India

© PressReader. All rights reserved.