غیر میں بارگاه کی اسلام پیغمبر احترام خراج کا شعراء مسلم

Maarif - - ء۲۰۱۸ اپریل معارف -

ہے رجحان یہ کا علم اہل پر طور عام میں سلسلہ کے شریف نعت

و عقیدت کی اکرمؐ حضور شعراء والے کہنے پاک نعت نزدیک کے ان کہ ایک ایک بلکہ شعر ایک ایک کا ان اور ہیں رہتے ہوئے ڈوبے میں محبت میں خیال کے ان اور ہے آتا نظر ہوا کرتا نشاندہی کی رسولؐ عشق مصرع کے اس قدر اسی گا کرے اظہار کا وارفتگی قدر جس میں نعتوں شاعر کہا آئینہ کا جذبات دلی کو شعر کہ ہے سبب یہی ہوگی، پیدا تاثیر میں اشعار نکلنے سے دل( ریزد‘‘ بردل خیزد ازدل’’ ہی پر موقع ایسے اور ہے گیا

ہے۔ جاتا کیا استعمال مقولہ کا ہے) کرتی اثر پر دل ضرور بات والی کے ہونے علم طالب ادنیٰ ایک کا ادبیات و اسلامیات الحروف راقم

و عشق سے پرنورؐ حضور کہ ہے سمجھتا ضروری کرنا عرض یہ ناطے گوئی نعت کہ نہ ہے اولین شرط و لازم لیے کے سلامتی کی ایمان محبت

ہے: مروی میں شریف حدیث کہ جیسا لیے۔ کے والناس ولده و والده من الیہ احب اکون حتیٰ احدکم ومنٴلای

علیہ) متفق( نہیں مومن تک وقت اس شخص بھی کوئی سے میں تم یعنی

ماں کے اس ذات، کی اس )للهؐ رسول( میں کہ تک جب ہوسکتا، نہ محبوب کا اس زیاده سے انسانوں تمام اور اولاد کی اس باپ،

رہوں۔ پر شاعری فن کو شاعر کہ ہے یہ شرط لیے کے گوئی نعت

علم بخوبی کا کمالات و اوصاف کے ممدوح اپنے وه اور ہو حاصل دسترس اجمعین کرناڻک۔ بنگلور،

Newspapers in Urdu

Newspapers from India

© PressReader. All rights reserved.